Hakumat Kay aik senior scientific adviser (masheer) Sir Jeremy Farrar ki tarf say yeh bayyan us waqt aya hai, jab Sunday (Itwaar) ko UK (Bartania)  mein amwaat 10,000 say zaid ho gai.

UK (Bartania) coronavirus say Europe ka sub say zyada mutasir mulk ho sakta hai. Fil-hall Italy mein 19-hazar say zaid halakton ki tadaad kisi bhi European mulk ki amwaat say zyada hai, jis kay bad Spain, France aur Bartania hain.

Jab-kay, Bartania Kay Wuzrah mukhtalif hisson main garam aur dhoop kay mosam kay bawajood logon ko Easter weekend kay doran ghar per rehny ki taqeed krty rahy.

Prof Keith Neal, jo Nottingham University main mutaadi bemarion kay wabai amraaz (epidemiology of infectious diseases) kay professor hain,  nay BBC ko btaya keh “imkaan hai keh Bartania main coronavirus say honay wali amwaat ki sab say barhi tadad ho gai, keyun-kay Germany Kay bad is ki magharbi Europe main dusri barhi abadi hai”.

For complete & Live stats of UK, European and United States check our LIVE DASHBOARD (ALRAVI).

برطانیہ کورونا وائرس سے یورپ کا سب سے زیادہ متاثر ملک ہوسکتا ہے

حکومت کے ایک سینئر سائنسی مشیر، سر جیریمی فرار کی طرف سے یہ بیان اس وقت آیا ہے جب اتوار کو برطانیہ میں اموات 10 ہزار سےزائد ہو گئی  ۔

برطانیہ کورونا وائرس سے یورپ کا سب سے زیادہ متاثر ملک ہوسکتا ہے۔  فی الحال اٹلی میں 19 ہزار سے زائد ہلاکتوں کی تعداد کسی بھی یورپی ملک کی اموات سے زیادہ ہے جس کے بعد اسپین ، فرانس اور برطانیہ ہیں

جبکہ،  برطانیہ کے وزراء مختلف حصوں میں گرم اور دھوپ کے موسم کے باوجود  لوگوں کو ایسٹر ویک اینڈ کے دوران گھر پر رہنے کی تاکید کرتے رہے ۔

پروفیسر کیتھ نیل ، جو نوٹنگھم یونیورسٹی میں متعدی بیماریوں کے وبائی امراض کے پروفیسر ہیں ، نے بی بی سی کو بتایا کہ امکان ہے کہ برطانیہ میں کورونا وائرس سے ہونے والی اموات کی سب سے بڑی تعداد ہوگی کیونکہ جرمنی کے بعد اس کی مغربی یورپ میں دوسری بڑی آبادی ہے۔

“WORLDWIDE CORONAVIRUS DEATH TOLL PASSES 125,000”

DAILY UPDATES ON GLOBAL CORONA-VIRUS PANDEMIC

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here